رلا کر چل دیئے اک دن، ہنسی بن کر جو آئے تھے
چمن رو رو کے کہتا ھے، کبھی گل مسکرائے تھے

اگر دل کے زباں ہوتی، یہ غم کچھ کم تو ھو جاتا
ادھر وہ چپ، ادھر سینے میں ھم طوفاں چھپائے تھے

یہ اچھا تھا، نہ ھم کہتے کسی سے داستاں اپنی
سمجھ پائے نہ جب اپنے، پرائے تو پرائے تھے

Loading more stuff…

Hmm…it looks like things are taking a while to load. Try again?

Loading videos…